Failure of Ishmaelite outreach and tragedy of blasphemy

There are important outreach efforts in our sub-continent. Tabligh movement has global outreach but they are not qualified for interfaith dialogue. Dr Zakir is qualified and a bit confrontational but does not have an organized missionary movement. Mufti Taqi has written some reasonable material about Christianity but laymen in Tabligh movement are out of touch with it . Dr Qadri has tried to visit churches but he is criticized for condoning Christian errors, If we integrate these visions in qualification, compassion and outreach we can minimize these tragic events of blasphemy .

But still we should not ignore the legal element of our religion. In western law, in case of preponderant evidence makes you guilty. For example, the evidence against Dr Afia was not of totally certain nature but still she was sentenced. The idea of complete certainty of evidence is actually Islamic. So, in case of iota of doubt, life imprisonment is more just than execution.

مغرب میں اسلام کا پیغام عام کرنے کی کافی اہم کاوشیں بر صغير میں ہو رہی ہی۔ تبلیغی جماعت کے روابط عالمی سطح پر موجود ہیں لیکن وہ بین المذاہب مکالمے کے اہل نہیں۔ ڈاکٹر ذاکر اہل شخصیت ہیں لیکن ان میں تھوڑا پہلو محاذ آرائی کا بھی ہے اور ن کی کوئی منظم مشنری تحریک نہیں ہے۔ مفتی تقی عثمانی صاحب نے عیسائیت کے حوالے سے چند معقول کتب تحریر کی ہیں لیکن تبلیغ سے وابستہ ایک عام فرد ان سے لاعلم ہے۔ ڈاکٹر طاہر القادری نے گرجا گھروں میں جانا شروع کیا لیکن ان پر عیسائی اغلاط کو تسلیم کرنے کی وجہ سے تنقید کی جاتی ہے۔ اگر اہلیت ، ہمدردی اور اسلام کا پیغام کرنے کی کوشش جیسی تین باتیں جمع ہو جائیں تو ہم توہین رسالت جیسے سانحات ہونے کے امکانات کو کم سے کم کر سکتے ہیں۔ لیکن اس کے باوجود ہم اسلام کے قانونی پہلو کو نظر انداز نہیں کر سکتے۔ مغربی قانون میں ، غالب ثبوت آپ کو مجرم بنا دیتا ہے۔ مثال کے طور پر ڈاکٹر عافیہ صدیقی کے خلاف ثبوت کی نوعیت یقینی طور پر ثابت شدہ نہیں تھی لیکن انہیں سزا سنا دی گئی۔ ثبوت کا کلی طور پر یقینی ہونا اسلام کا دیا گیا تصور ہے۔ لہذا ، شبے کا شائبہ ہونے کی صورت میں سزائے موت کے بجائے عمر قید دینا زیادہ قرین انصاف ہوگا۔

https://azprojects.wordpress.com/2018/11/04/the-mission-of-the-ummah-and-asiya-bibi/

發表迴響

在下方填入你的資料或按右方圖示以社群網站登入:

WordPress.com 標誌

您的留言將使用 WordPress.com 帳號。 登出 /  變更 )

Twitter picture

您的留言將使用 Twitter 帳號。 登出 /  變更 )

Facebook照片

您的留言將使用 Facebook 帳號。 登出 /  變更 )

連結到 %s